سپریم کورٹ نے فون کارڈ پر ٹیکس معطل کر دئیے

 

سپریم کورٹ نے موبائل فون کے بیلنس ری چارج کارڈ پر وصول کیے جانے والے ٹیکسز معطل کر دیئے۔

نیو کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں موبائل فون پر اضافی ٹیکسز کے از خود نوٹس کی سماعت ہوئی جس دوران عدالت نے ٹیکسز معطل کرنے کا حکم جاری کیا اور عدالتی احکامات پر عملدرآمد کے لیے 2 دن کی مہلت دے دی۔

عدالت نے مزید حکم دیا کہ جس کا موبائل فون کا استعمال مقررہ حدسے زیادہ ہے اس سے ٹیکس لیں اور موبائل فون کارڈز پر ٹیکس وصولی کے لیے جامع پالیسی بنائی جائے۔

عدالت نے کہا کہ موبائل کارڈز پر موبائل کمپنیز اور ایف بی آر ٹیکس وصول کرتی ہیں یہاں لوگوں سے لوٹ مار کی جا رہی ہے۔ ایک بندہ ٹیکس نیٹ ورک میں نہیں آتا تو اس سے کیسے ٹیکس لیتے ہیں؟

عدالت کا کہنا تھا کہ 100 روپے کا کارڈ کرنے پر 64.38 پیسے وصول ہوتے ہیں یہ غیر قانونی ہے۔اس موقع پر جسٹس اعجاز نے ریمارکس دیئے کہ ریڑھی بان سے کیسے ٹیکس لیا جاسکتا ہے؟

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
11 Jun, 2018 Total Views: 3141 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
May Allah bless the chief justice of Pakistan aameen
By: Sadia Waheed, Karachi on Jun, 11 2018
Reply Reply
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
The Supreme Court on Monday suspended ‘exorbitant tax deductions’ on prepaid mobile cards. Chief Justice of Pakistan (CJP) Saqib Nisar gave two days for the order to be implemented at a hearing of the suo motu case at the apex court’s Lahore Registry. “Rs38.08 are deducted on a prepaid mobile card of Rs100,” CJP Nisar remarked. “This is illegal.”
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB