پروفیسر ڈاکٹر مجیب ظفر انوار حمیدی

(الیاس احمد , Lahore)

پروفیسر ڈاکٹر سید مجیب ظفر انوار حمیدی کسی تعارف کے محتاج نہیں ہیں ۔ آپ ’’ بابائے ادب اطفال ‘‘ ( پاکستان) کہلاتے ہیں اور بچوں کے لیے آپ کی تصانیف کی تعداد 25 سے زیادہ ہے ۔ مجیب ظفر انوار نے بڑوں کے لیے بھی لکھا ہے اور ’’ قومی زبان ‘‘ ، ’’ افکار ‘‘ ، ’’ شب خون ‘‘ ، ’’ سیپ ‘‘ اور دیگر ادبی پرچوں میں آپ کی تخلیقات شایع ہو چکی ہیں ۔ ملتان سے ڈاکٹر اسد اریب ( بچوں کے ادب پر پہلے پی ایچ ڈی ڈاکٹر ) نے پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی کے فن اور شخصیت پر کئی کتابیں لکھی ہیں جن میں ’’ تذکرے و تبصرے ‘‘ ، ’’ نئے رجحانات ، بچوں کے ادب میں ‘‘ وغیرہ شامل ہیں ۔

پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی کا اصل نام ( تاریخی نام ) سید یوسف حسین جمال ہے جو آپ کی پھوپھی سلمیٰ خاتون نے رکھا ۔ دلاور فگار ، مجیب ظفر کے چچا تھے جو خود بھی بر صغیر کے ممتاز مزاح گو شاعر تھے۔مجیب ظفر انوار حمیدی 24 اگست 1960 ء کو کراچی میں پیدا ہوئے تاہم کچھ تحقیقات میں پروفیسر مجیب حمیدی کی تاریخ پیدائش 24 اگست 1953 ء اور 24 اگست 1959 ء بھی درج ہے ۔ بہر حال ریکار ڈ کے طور پر تو تینوں تاریخوں کو درست مانا جائے گا ۔آپ کے والدین میں سید انوار حسین حمیدی بدایونی اور سیدہ فاطمہ اختر نصیری شامل ہیں ۔ بشرہ ظفر بہن ، جبکہ نوید ظفر انوار بھائی ہے ۔ زین انوار بیٹا ہے جبکہ ایک لڑکی مریم نامی کو پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی کی اہلیہ ناہید نرگس نے لے کر پالا تھا ۔مجیب ظفر انوار صاحب نے سیدہ ناہید نرگس سے 24 دسمبر 1986 ء کو عقد کیا ۔

پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی تعلیم یافتہ ادیب اور معلم اردو ادب ہیں ۔ آپ نے ’’ پاکستا ن اسٹیل کیڈٹ کالج ‘‘ ، ’’ آغا خان کالج ‘‘ ، ’’ کیڈٹ کالج پٹارو ‘‘ ، ’’ محمد علی جناح یونیورسٹی ‘‘ ، ’’ اردو کالج ‘‘ ، ’’ دہلی کالج ‘‘ اور ’’ سراج الدولہ گورنمنٹ ڈگری کالج ‘‘ میں بھی پڑھایا ۔آپ ’’ تابانی گروپس آف ٹیکنالوجی ‘‘ میں بھی اردو ادب کے پروفیسر رہے اور آپ نے ایک مقامی سیل فون کمپنی کی آن لائن اردو لغت بھی مرتب کی ۔مجیب ظفر انوار حمیدی کی نصف صدی سے زیادہ ادبی خدمات ہیں ۔ نیشنل بک فانڈیشن ( حکومت پاکستان ) نے آپ کی بچوں کی کئی کتابوں کو ادبی اعزازات اور اسناد عطا کیں ۔ ان کتابوں میں سے کچھ یہ ہیں :
(۱) گرم گرم روٹیاں
(۲) لیجیئے آئس کریم کھائیے
(۳) بگلو کی چھٹیاں
(۴) چابی والی موٹر ( چار ایڈیشن )
(۵) پراسرار صندوق
(۶) سب نے کہا شکریہ
(۷) حسن کی کہانیاں
(۸) غزلیہ ( شاعری )
(۹) آتا ہے یاد مجھ کو ( سوانح )
(۱۰) میرے دوست ( سوانح کا دوسرا حصہ ) وغیرہ وغیرہ

اعزازات :
پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی دو مرتبہ ’’ تمغہ حسنِ کارکردگی ‘‘ اور ’’ ستارۂ امتیاز ‘‘ کے لیے نامزد ہوئے لیکن چونکہ پاکستانی ادب ’’ بچوں کے ادب ‘‘ کو شامل نہیں کیا جاتا ، اس لیے ڈاکٹر حمیدی صاحب ان وقتی اعزازات سے ظاہراً محروم رہے ۔آپ کی شخصیت بذات خود ایک اعزاز ہے۔مجیب ظفر انوار صاحب ہومیو پیتھک ڈاکٹر بھی ہیں اور آپ نے ’’ جناح میڈیکل کالج ‘‘ سے ہومیو میڈیسنز بھی پڑھیں ۔سرکاری تعلیمی افسر (پروفیسر اردو ادبیات و لسانیات ) ہیں ۔ ضعیف ہیں اور کراچی میں عرصے سے مقیم ہیں ۔ پاکستان کے علاوہ کووینا ( کیلی فورنیا ) ، واشنگٹن ، برطانیہ اور چین میں بھی اردو ادب کی تعلیم دے چکے ہیں ۔ آپ کو ’’ وائس آف امریکا ‘‘ اور ’’ بی بی سی ‘‘ ( لندن) نے بھی مدعو کیا ۔

آپ پاکستان چلڈرن رائٹرز گلڈ کے بانی بھی ہیں اس کے علاوہ حمیدی چلڈرن فائونڈیشن کے بانی بھی ہیں۔
پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی نے ’’ سائنسی ادب ‘‘ بھی لکھا اور ’’ بچوں کے ادب ‘‘ کے تو بے تاج بادشاہ ہیں ۔
References :
http://en.wikipedia.org/wiki/Mujeeb_Zafar_Anwar_Hameedi
http://ur.wikipedia.org/wiki/%D9%85%D8%AC%DB%8C%D8%A8_%D8%B8%D9%81%D8%B1_%D8%A7%D9%86%D9%88%D8%A7%D8%B1_%D8%AD%D9%85%DB%8C%D8%AF%DB%8C
Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
13 Oct, 2012 Total Views: 1215 Print Article Print
NEXT 
About the Author: الیاس احمد


Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
Reviews & Comments
i proud that i am student of MujeebZafar Anwar Hamidi
By: ali, KARACHI on Jul, 31 2014
Reply Reply
0 Like
بہت بڑا انسان ، اُس سے بھی بڑا انسان ۔۔۔میں حیران ہوں کہ ’’مجیب ظفر انوار ‘‘ سید حمیدی صدیقی کو بھی یہ مٹی کھا جائے گی ؟ کیسے ؟ کیا سورج بھی مٹی میں مل جاتے ہیں ، مجیب ظفر انوار حمیدی جیسا خاک نشیں جو عرش نشیں ہوتے ہیں ، یہ نعتوں حمدوں پر زار و قطار روتے ، ٹکریں مارنے والے عجیب پروفیسرز جن سے زیادہ اعلا و بالا ان کے چپڑاسی دکھائی دیتے ہیں ،یہ بسوں اور رکشوں میں سفر کرنے والے ولی اور صوفی صفت لوگ ۔۔۔یہ کیا جانیں شہرت و نام و نمود ، جو محمد کا نام نہ سُن سکیں اور چیخیں مار مار کر رونا شروع کردیں جو دن بھر میں الللہ سے چھپ چھپ کر کئی مرتبہ باتیں کرلیں اللہ اللہ ۔۔۔۔میری آنکھوں کا پانی مجھے کچھ اور لکھنے نھیں دے رہا ۔۔۔۔
کاش موت مجیب ظفر انوار حمیدی کو چھوڑ دے ، میں اُن کا بیس برس پہلے کا شاگرد ہوں ، اب پتا چلا کہ مجیب ظفر انوار حمیدی کے روپ میں مجھے کسی پیمبر نے کالج میں اُردو سکھلائی ہے ، مجیب خادمِ اللہ ہے ، غلامِ محمد ؐ ہے ، اللہ میرے استاد محترم کو طویل حیات صحت دے ، عزت دے ، مزید نیک شہرت دے ، سر ۔۔۔۔ وہ آل آر پراؤڈ آف یو سر ۔۔۔آپ پاکستان کا اثاثہ ہیں ، آپ تعلیم کا اثاثہ ہیں ۔۔۔۔مجیب ظفر انوار زیندہ باد ، پائندہ باد ۔۔۔
By: سید اشرف علی تھانوی , ملتان on Jul, 04 2014
Reply Reply
0 Like
Best Prof Dr Mujeeb Hameedi Shb :) Nice to met Dr Mujeeb Hameedi Sahib
Hilal Naqvi
By: Dr Hilal Naqvi, London on Mar, 12 2014
Reply Reply
0 Like
عظیم المرتب پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی صاحب کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے وہ پاکستان میں بچوں کا ادب تخلیق کرنے کے حوالے سے سب سے بڑا نام ہیں ۔ مگر اردو ادب کے ساتھ ساتھ انہوں نے تعلیم طب اور لسانیات کے شعبوں میں بھی گرانقدر خدمات انجام دیں وہ اپنی ذات میں خود پوری ایک انجمن ہیں ان کے بارے میں یہ تحریر ایک مختصر مگر خاصہ جامع جائزہ ہے اور مصنف کا ان سے لگاؤ اور نیاز مندی کا ثبوت بھی ۔ ان کی پہلی اور واحد تحریر ویب پیج پر ۔ یہ بجائے خود ایک اعزاز ہے ۔ بس ایک بات اور کہ پروفیسر صاحب کے جو تین مختلف سال پیدائش لکھے گئے ہیں ان میں سے کوئی بھی درست نہیں ہے جب اتنا کنفیوژن تھا تو اس معاملے کا ذکر بھی کوئی ایسا ضروری نہیں تھا ۔ یہ بات واقعی افسوس کی ہے کہ پاکستان میں بچوں کے ادب کو سرکاری سطح پر کوئی مقام حاصل نہیں ہے اور یہ ہمارے حکمرانوں اور سیاسی پہلوانوں کے ذہنی دیوالیہ پن کا کھلا ثبوت ہے ۔ خیر پروفیسر صاحب کی ذات ان دنیاوی اور نمائشی ایوارڈوں سے کہیں بالا تر ہے ان کے پرستاروں کی ان کے لئے دلی قدر منزلت ہی سب سے بڑا اعتراف ہے ۔ خدا پروفیسر صاحب کے مقام و مرتبے میں اور بھی اضافہ فرمائے اور ان کی عمر اور صحت میں برکت عطا فرمائے ۔آمین ۔
By: Rana Tabassum Pasha(Daur), Dallas,USA on Oct, 18 2013
Reply Reply
33 Like
ایک عالم پر لکھا گیا بہترین مقالہ
By: Dr Ghani Dehlavi, Lahore on Oct, 01 2013
Reply Reply
2 Like
نہایت خوب صورت ، دیدہ زیب اور کسی حد تک مکمل مضمون ہے ت ، اس مقالے کی ایک کتاب بن سکتی ہے کیونکہ محترم ڈاکٹر صاحب پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی کی ادبی خدمات ساٹھ برسوں پر محیط ہیں ۔ان کے بچپن سے لے کر پچپن تک کے ہزاروں ادبی معرکات اور واقعات ہیں جو منصئۃ شہود پر لاہے جاسکتے ہیں۔پاکستان کا مان ، شان ، آن ، وقار اور آبرو ہیں پروفیسر مجیب ظفر انوار حمیدی صاحب ، اللہ ان کو سلامت رکھ اللہ ان کو سلامت رکھ اللہ ان کو ان کے گھر والوں کو ان کے فینز کو سلامت تاقیامت رکھ ، آمین !
ڈاکٹر کُبریٰ سید
ٹورنٹو (کینیڈا)
By: ڈاکٹر کُبریٰ سیّد , ٹورنٹو کینیڈا on Aug, 24 2013
Reply Reply
1 Like
بہت خوب مضمون ہے ، اس مضمون کو مزید طویل کیجئے اور مزید تفصیلات شامل کریں ۔
By: Farooq Rana Tahir, Sargodha on Apr, 11 2013
Reply Reply
1 Like
بہت خوب مضمون ہے
By: Dr Shahnaz Asad, U.S.A on Apr, 10 2013
Reply Reply
1 Like
بہت خوب مضمون ہے ، اس مضمون کو مزید طویل کیجئے اور مزید تفصیلات شامل کریں ۔الیاس احمد صاحب میری یہ آپ سے گذارش ہے کہ مجیب ظفر انوار حمیدی کے ادبی سفر کے بارے میں مزید کچھ تحریر فرمائیں سر آپ۔نوازش ہوگی
ڈاکٹر محمد محسن
کراچی
By: ڈاکٹر محمد محسن, کراچی on Mar, 01 2013
Reply Reply
1 Like
Very interesting and Literary article which is also helpful for Ph.D students in Urdu bachon Ka Adab.Mr Mujeeb Zafar Anwar Hameedi is wel known awarded literary personality and senior most educatinalist also
By: Akhtar Ali, Karachi on Jan, 25 2013
Reply Reply
1 Like
Very interesting and Literary article which is also helpful for Ph.D students in Urdu bachon Ka Adab.Mr Mujeeb Zafar Anwar Hameedi is wel known awarded literary personality and senior most educatinalist also.May allah live him long aameen
Naeem Abrar
By: Dr Sarwat , Islamabad on Nov, 25 2012
Reply Reply
1 Like
Excellent Article
By: [email protected], Karachi on Nov, 23 2012
Reply Reply
1 Like
مجیب ظفر انوار حمیدی
aik azeem adeeb , aik azeem tareen ustaad e Mohtaram Allah salamat rakhey aameen.
Syed Samar e Abbas Zaidi
By: syed samar Abbas Zaidi, Lahore on Nov, 18 2012
Reply Reply
1 Like
مجیب ظفر انوار حمیدی
aik azeem adeeb , aik azeem tareen ustaad e Mohtaram Allah salamat rakhey aameen.
By: syed samar Abbas Zaidi, Lahore on Nov, 18 2012
Reply Reply
1 Like
v nice excellent Proff writer for chidren great....great
By: Dr Asar Beig, Delhi on Nov, 16 2012
Reply Reply
1 Like
Excellent Article.
By: Dr Zubair, Sakkur on Nov, 15 2012
Reply Reply
1 Like
v nice wel done theises
By: Dr Zille Subhan, Delhi(India) on Nov, 12 2012
Reply Reply
1 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB