ایسی جمہوریت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کا کیا فائدہ جو غریب کے جان مال کا تحفظ نہیں کر سکتے : اسد عمر

12 Jan, 2017 نوائے وقت
اپنے ایک ٹویٹ میں پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما اسد عمر کا کہنا ہے کہ اورنج لائن ٹرین پر کام کرنے والے سات مزدوروں کی موت کی ذمہ داری کون لے گا، مزدوروں کا خون تعمیراتی کمپنی، یا پنجاب حکومت میں سے کس کے کھاتے میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے میں غریب کی بچی طیبہ کو دردناک سلوک کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، یہ معاشرہ غریب اور محنت کشوں کو اورنج لائن میں مرنے والوں جیسی موت دیتا ہے۔ کیا اس ملک میں کوئی طاقتور کو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کر سکتا ہے؟ کیا طیبہ پر ظلم کرنے اور مزدوروں کو اورنج لائن جیسی موت دینے والے کسی طاقتور کو کوئی سزا دے سکتا ہے؟ اسد عمر نے کہا کہ اگر کوئی ظلم و سفاکیت کیخلاف آواز اٹھائے تو اسے جمہوریت کا درس سننے کو ملتا ہے؟ ایسی جمہوریت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کا کیا فائدہ جو غریب کے جان مال کا تحفظ نہیں کر سکتے۔

Watch Live News

اعتراضات مسترد ، کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی منظور

17 Aug, 2017 نیو

لاہور: سابق وزیر اعظم محمدنواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کے این اے 120 کے ضمنی انتخاب میں ک ... مزید

امریکی شہریوں کوبڑا خطرہ درپیش، حکومت نے وارننگ جاری کردی

17 Aug, 2017 نیو

واشنگٹن:امریکا اور ایران کے درمیان تازہ کشیدگی کے بعد امریکی وزارت خارجہ نے شہریوں کو ایرا ... مزید

پولینڈ کی بری فوج کے کمانڈر کا جی ایچ کیو کا دورہ، آرمی چیف سے ملاقات

17 Aug, 2017 نیو

راولپنڈی: پولینڈ کے لینڈ فورسز کے کمانڈر نے جمعرات کو جی ایچ کیو کا دورہ کیا اور آرمی  ... مزید

الیکشن لڑنے کیلئے اہل قرار ،نواز شریف کو بڑی خوشخبری مل گئی

17 Aug, 2017 چینل-٥

لاہور(ویب ڈیسک ) الیکشن کمیشن نے این اے 120کیلئے ن لیگ کی میدوارکلثوم نوازکے کاغذات کی جان ... مزید

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے مشترکہ مفادات کونسل کی تشکیل نو کردی

17 Aug, 2017 نوائے وقت

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے مشترکہ مفادات کونسل کی تشکیل نو کردی ہے، چاروں وزرا ئے ا علی ... مزید

وزیراعظم نے اشتہاری مہم میں اپنی تصویر کی اشاعت پرپابندی لگادی

17 Aug, 2017 نوائے وقت

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اشتہاری مہم میں اپنی تصویر کی اشاعت پر پابندی لگادی ہے۔نجی ٹی ... مزید

Load More
Post Your Comments
Select Language:    
MORE ON NEWS
MORE ON HAMARIWEB