شراپووا ومبلڈن میں براہِ راست کوالیفائی کرنے کے لیے کوشاں

19 May, 2017 بی بی سی اردو
روسی ٹینس سٹار ماریا شراپووا ومبلڈن میں حصہ لینے کے لیے وائلڈ کارڈ پر انحصار کرنے کی بجائے براہِ راست کوالیفائی کرنے کی کوشش کریں گی۔
ماریا شراپووا

روسی ٹینس سٹار ماریگ شراپووا ومبلڈن میں حصہ لینے کے لیے وائلڈ کارڈ پر انحصار کرنے کی بجائے براہِ راست کوالیفائی کرنے کی کوشش کریں گی۔

ممنوعہ ادویات استعمال کرنے کی پاداش میں 15 ماہ کی پابندی کے بعد وہ ٹینس کی دنیا میں دوبارہ سے قدم جمانے کی کوشش کر رہی ہیں۔

30 سالہ شراپووا کو فرینچ اوپن میں وائلڈ کارڈ کے ذریعے شمولیت کی درخواست رد کر دی گئی تھی۔ حکام کا کہنا تھا کہ اس کی وجہ ان پر عائد پابندی تھی۔

٭ کیا شراپووا واپسی کے بعد کامیاب رہیں گی؟

٭ ’ڈوپنگ کے جرم میں سزا کاٹنے والوں کے لیے وائلڈ کارڈ نہیں‘

اب شراپووا کو ومبلڈن میں حصہ لینے کے لیے تین کوالیفائنگ راؤنڈز جیتنا پڑیں گے۔

شراپووا نے اپنی ویب سائٹ پر ایک بیان میں کہا: 'واپسی کے بعد میں نے تین ٹورنامنٹ کھیلے ہیں جن کے بعد میری رینکنگ بہتر ہوئی ہے۔ میں روہیمپٹن میں ومبلڈن کے لیے کوالیفائنگ ٹورنامنٹ کھیلوں گی، اور شرکت کے لیے وائلڈ کارڈ کی درخواست نہیں کروں گی۔'

شراپووا کی رینکنگ اس وقت 211 ہے۔ یہ اس قدر کم ہے کہ وہ ومبلڈن کے مین ڈرا میں شرکت نہیں کر سکتیں۔ تاہم ان کی حالیہ فارم اچھی ہے اور وہ اگر آگے چل کر بہتر کھیل پیش کریں تو براہِ راست کوالیفائی کر سکتی ہیں۔

اگر گذشتہ ہفتے وہ اٹالین اوپن کے سیمی فائنل تک پہنچ جاتیں تو انھیں خود کار طریقے سے انٹری مل جاتی۔ لیکن وہ دوسرے راؤنڈ کے میچ ہی میں ریٹائر ہو گئیں۔

اگر وہ وائلڈ کارڈ کے لیے درخواست دیتیں تو ومبلڈن کمیٹی اس کا جائزہ لے کر 20 جون کو فیصلہ سناتی۔

 

Watch Live News

 مزید خبریں 
« مزید خبریں
Post Your Comments
Select Language: