الیکشن کمیشن  دفعہ 62/63پر عمل درآمد کو یقینی بنائے :سینیٹر سراج الحق

14 Jun, 2018 نوائے وقت
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ آزاد عدلیہ کا مطلب یہ ہے کہ انصاف سب کے لیے ہو۔ پرویز مشرف سمیت کوئی سیاسی لیڈر اور جر نیل قانون سے بالاتر نہیں ہے۔ انصاف سے محروم معاشرے زیاد ہ دیر تک قائم نہیں رہتے۔پاکستان میں سیاست اور جمہوریت کی طرح عدالتیں بھی کبھی آزاد نہیں رہیں۔ لوگوں نے عدلیہ سے بڑی توقعات وابستہ کرلی ہیں اور عوام کو بڑی امید یں ہیں کہ اب کوئی قانون سے بالاتر نہیں رہے گا۔ الیکشن کمیشن آئین کی دفعہ 62/63پر عمل درآمد کو یقینی بنائے ۔ان خیالات کا اظہا رانہوں نے تیمرگرامیں ڈسٹرکٹ بار تیمر گرا کے صدر کفایت یار ایڈووکیٹ کی قیادت میں ملاقات کرنے والے وکلاء کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ دنیا میں انہی قوموں نے ترقی و خوشحالی حاصل کی ہے جنہوں نے قانون اور انصاف کو ہرچیز پر مقدم رکھا ہے۔پاکستان میں آئین اور قانون کی بالادستی کے خواب کو حکمرانوں اور اسٹیٹس کو کی قوتوں نے کبھی بھی شرمند ہ تعبیر نہیں ہونے دیا۔حکمرانوں کے لیے قانون موم کی ناک اور غریب کے لیے لوہے کے چنے ثابت ہوا ہے۔غریب کو کبھی انصاف نہیں ملا اور تھانے کچہری پر ہمیشہ جاگیرداروں ،وڈیروں اور سرمایہ کاروں کا قبضہ رہا ہے۔غریب کے لیے انصاف کے حصول کو ناممکن بنا دیا گیا ہے ۔ عدالتوں کے دروازے سونے کی چابی سے کھلتے ہیں۔
 

Watch Live News

 مزید خبریں 
« مزید خبریں
Post Your Comments
Select Language: