کون سا سمارٹ فون کتنی مقدار میں خطرناک شعاعیں خارج کرتا ہے؟ جرمنی کے سرکاری ادارے کے اعداد و شمار نے دنیا بھر میں کھلبلی مچا دی

11 Feb, 2019 روزنامہ اوصاف

لاہور (ویب ڈیسک) سمارٹ فونز کے بڑھتے ہوئے استعمال کیساتھ سائنسدان اس سے خارج ہونے والی شعاعوں کے نقصانات سے بھی آگاہ کرتے رہتے ہیں تاہم کون سا موبائل کتنی مقدار میں

خطرناک شعاعیں خارج کرتا ہے؟ اس بارے میں اب تک کسی کو معلوم نہیں تھا۔ریڈی ایشن سے حفاظت کے جرمن فیڈرل ادارے نے اس حوالے سے ایک فہرست جاری کی ہے جس میں سب سے زیادہ اور کم مقدار میں خطرناک شعاعیں خارج کرنے والے سمارٹ فونز کے بارے میں بتایا گیا ہے جس کے باعث پوری دنیا میں کھلبلی مچ گئی ہے کیونکہ انتہائی معروف کمپنیوں کے سمارٹ فونز سے بھی انسانی جان کو بے حد خطرہ ہے۔یہ رپورٹ چینی کمپنیوں ’شیاؤمی‘ اور ’ون پلس‘ کے سمارٹ فونز استعمال کرنے والے صارفین کیلئے کسی ’خطرے‘ سے کم نہیں ہے کیونکہ ان کمپنیوں کے موبائل فونز نے فہرست میں پہلی پانچ پوزیشنز حاصل کی ہیں۔ فہرست کے مطابق ’شیاؤمی‘ کا سمارٹ فون ’A1‘ سب سے زیادہ خطرناک ثابت ہوا ہے جو 75.1 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے۔دوسرے نمبر پر ’ون پلس‘ کمپنی کا فون ’5T‘ ہے جو 1.68 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے اور تیسرے نمبر پر ’Mi Max 3 ‘ ہے جو 1.58 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے جبکہ چوتھے نمبر پر ’ون پلس‘ کی جانب سے ریلیز ہونے والا حالیہ فون ’6T‘ ہے جو 1.55 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے۔خوفناک بات یہ ہے کہ گوگل کمپنی کے ’پکسل‘ فون بھی غیر محفوظ ثابت ہوئے ہیں کیونکہ اس فہرست کے مطابق گوگل کا Pixel 3XL سمارٹ فون 1.39 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے اور اس کے بعد ’ون پلس 6‘ کا نمبر آتا ہے جو 1.33 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے جبکہ ’شیاؤمی‘ کمپنی کا ’ریڈمی نوٹ 5‘ سمارٹ فون 1.29 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے۔جہاں تک ایپل کے آئی فون کی بات ہے تو اس میں سب سے خطرناک ’آئی فون 7‘ ثابت ہوا ہے جو 1.38 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے جبکہ ’آئی فون XR ، آئی فون XS، آئی فون XS Max اور آئی فون X صرف 0.99 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتے ہیں۔ریڈی ایشن خارج کرنے والے موبائل فونز کی اس فہرست میں سام سنگ کے سمارٹ فونز سب پر بازی لے گئے ہیں جس کے مطابق نوٹ 8 سب سے کم یعنی صرف 0.17 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے اور سام سنگ گلیکسی A8 صرف 0.24 واٹس فی کلوگرام، گلیکسی X8+ صرف 0.26 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے جبکہ گلیکسی S9+ صرف 0.29 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے۔چینی کمپنی ہواوے کا میٹ 20 پرو اس وقت دستیاب دنیا کے بہترین کیمرے والے سمارٹ فونز میں سے ایک ہے اور یہ جان کر آپ کو حیرت ہو گی کہ ریڈی ایشن خارج کرنے کے حوالے سے بھی یہ بہترین ثابت ہوا ہے کیونکہ جرمن ادارے کی فہرست کے مطابق یہ صرف 0.4 واٹس فی کلوگرام ریڈی ایشن خارج کرتا ہے۔جرمن ادارے کی جانب سے چینی کمپنیوں ”اوپو“ اور ”ویوو“ کے بنائے گئے سمارٹ فونز کو ٹیسٹ میں شامل نہیں کیا گیا۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ ابھی تک یہ فیصلہ نہیں کیا جا سکتا کہ کتنی ریڈی ایشن خارج کرنے والے موبائل فون انسانی صحت کیلئے خطرہ ہے البتہ جرمنی کی ماحولیاتی ایجنسی کی جانب سے 0.60 واٹ فی کلوگرام اور اس سے کم ریڈی ایشن خارج کرنے والے سمارٹ فونز کو قابل قبول قرار دیا ہے اور اگر اس تناظر میں دیکھا جائے تو مارکیٹ میں دستیاب بہت سے سمارٹ فونز انسانی صحت کیلئے خطرناک ہیں۔


WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels
 
« مزید خبریں