ٹوٹ بٹوٹ کے خالق صوفی غلام مصطفیٰ تبسم

12 Feb, 2019 جی این این
1965ء کی پاک بھارت جنگ کے دنوں سیالکوٹ، لاہور اور سرگودھا میں جنگی طیاروں کی گھن گرج اور بمباری کے شور سے کان پڑی آواز سنائی نا دیتی تھی. جیسے ہی بمباری کا سلسلہ رکتا تو دور کسی جگہ سے ریڈیو کے سپیکر سے نکلتی نور جہاں کی آواز سنائی دیتی جو یہ گیت گا ر ہی ہوتی ہیں " اے پتر ہٹاں تے نئیں وکدے، کی لَبھنی ایں وچ بازار کُڑے"۔۔۔   اس جنگی نغمے کے علاوہ بھی کچھ گیت تھےجو وقفے وقفے سے سننے کو ملتے  جیسا کہ " میریا ڈھول سپاہیا تینوں ربّ دیا رکھاں"، " کرنیل نی جرنیل نی" ۔۔۔
 

Watch Live News

 مزید خبریں 
« مزید خبریں
Post Your Comments
Select Language: