تجھ سے گرویدہ یک زمانہ رہا

Poet: Hasrat Mohani
By: abid, khi

تجھ سے گرویدہ یک زمانہ رہا
کچھ فقط میں ہی مبتلا نہ رہا

آپ کو اب ہوئی ہے قدر وفا
جب کہ میں لائق جفا نہ رہا

راہ و رسم وفا وہ بھول گئے
اب ہمیں بھی کوئی گلہ نہ رہا

حسن خود ہو گیا غریب نواز
عشق محتاج التجا نہ رہا

بسکہ نظارہ سوز تھا وہ جمال
ہوش نظارگی بجا نہ رہا

میں کبھی تجھ سے بدگماں نہ ہوا
تو کبھی مجھ سے آشنا نہ رہا

آپ کا شوق بھی تو اب دل میں
آپ کی یاد کے سوا نہ رہا

اور بھی ہو گئے وہ غافل خواب
نالۂ صبح نارسا نہ رہا

حسن کا ناز عاشقی کا نیاز
اب تو کچھ بھی وہ ماجرا نہ رہا

عشق جب شکوہ سنج حسن ہوا
التجا ہو گئی گلہ نہ رہا

ہم بھروسے پہ ان کے بیٹھ رہے
جب کسی کا بھی آسرا نہ رہا

میرے غم کی ہوئی انہیں بھی خبر
اب تو یہ درد لا دوا نہ رہا

آرزو تیری برقرار رہے
دل کا کیا رہا رہا نہ رہا

ہو گئے ختم مجھ پہ جور فلک
اب کوئی مورد بلا نہ رہا

جب سے دیکھی ابوالکلام کی نثر
نظم حسرتؔ میں بھی مزا نہ رہا
 

Rate it:
28 Jul, 2017

More Hasrat Mohani Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City