تماشہ

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi, Karachi

تماشہ دیکھنے والوں تماشہ دیکھتے رہنا
تمہیں ہوگا ہمیشہ ہی خسارہ دیکھتے رہنا

جوانی بھی نہیں رہتی اسے بھی ڈھل ہی جانا ہے
بڑھاپے کا بھی تم اپنے اشارہ دیکھتے رہنا

ابھی بھی وقت ہے باقی ذرا تم سوچ لو پھر سے
سفینہ پھر بھی ڈوبے گا کنارہ دیکھتے رہنا

گیا یہ وقت تو باقی بچے گا پھر نہیں کچھ بھی
تباہی کا تم اپنی خود نظارہ دیکھتے رہنا

نہ جانے کون سے لمحے میں تم سب سے بچھڑ جاؤں
بڑی مشکل میں ہوں مجھ کو خدارا دیکھتے رہنا
 

Rate it:
16 Feb, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 194 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City