رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ
Poet: Ahmed Faraz
By: usman, khi

رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ
آ پھر سے مجھے چھوڑ کے جانے کے لیے آ

کچھ تو مرے پندار محبت کا بھرم رکھ
تو بھی تو کبھی مجھ کو منانے کے لیے آ

پہلے سے مراسم نہ سہی پھر بھی کبھی تو
رسم و رہ دنیا ہی نبھانے کے لیے آ

کس کس کو بتائیں گے جدائی کا سبب ہم
تو مجھ سے خفا ہے تو زمانے کے لیے آ

اک عمر سے ہوں لذت گریہ سے بھی محروم
اے راحت جاں مجھ کو رلانے کے لیے آ

اب تک دل خوش فہم کو تجھ سے ہیں امیدیں
یہ آخری شمعیں بھی بجھانے کے لیے آ
 

Rate it: Views: 385 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 08 May, 2017
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Ranjish Hi Sahi Dil Dukhanay Kai Lye Aa is the line which refers to the poet Ahmed Faraz, this sad poetry is all time popular sad poetry in the subcontinent. I think it is never goes wrong that due to this poetry Ahmed Faraz become a popular poet.
By: umair, khi on Jan, 10 2019
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.