لائی پھر اک لغزش مستانہ تیرے شہر میں
Poet: Kaifi Azmi
By: iqrah, khi

لائی پھر اک لغزش مستانہ تیرے شہر میں
پھر بنیں گی مسجدیں مے خانہ تیرے شہر میں

آج پھر ٹوٹیں گی تیرے گھر کی نازک کھڑکیاں
آج پھر دیکھا گیا دیوانہ تیرے شہر میں

جرم ہے تیری گلی سے سر جھکا کر لوٹنا
کفر ہے پتھراؤ سے گھبرانا تیرے شہر میں

شاہ نامے لکھے ہیں کھنڈرات کی ہر اینٹ پر
ہر جگہ ہے دفن اک افسانہ تیرے شہر میں

کچھ کنیزیں جو حریم ناز میں ہیں باریاب
مانگتی ہیں جان و دل نذرانہ تیرے شہر میں

ننگی سڑکوں پر بھٹک کر دیکھ جب مرتی ہے رات
رینگتا ہے ہر طرف ویرانہ تیرے شہر میں

 

Rate it: Views: 24 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 21 Mar, 2018
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
After read this poetry 'Layi Phir Ek Laghzish' by Kaifi Azmi I feel that he have some unique ability to pay his words in the shape of Sad Ghazalz, really I love his poetry.
By: iffat, khi on Aug, 07 2018
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.