اسے آنے تو دو

Poet:
By: Tooba, Karachi

اسے حلف تو اٹھانے دو کام کرکے بھی دکھائے گا
ذرا ٹھرو تو جو کہا ہے وہ پورا کر کے دکھائے گا
کتنے سال کرپٹ لوگوں کے ہاتھ میں لوٹے گئے ہو
اب ایماندار انسان کا بھی تھوڑا انتظار کر لو
دھوکا نہیں دے گا وہ
پیٹھ دکھانے والوں میں سے نہیں ہے وہ
جائیداد چھوڑ کے آیا ہے ملک کے لئے
کیونکہ اسے کچھ کرنا ہے اپنے ملک کے لیے
کیوں اس کی سادگی کھٹکتی ہے لوگوں کو
پہلے تو نہ دکھائی تھی کسی نے اتنی سادگی
اب جو کوئی دکھا رہا ہے
تو تمہیں کیا ہو رہا ہے

Rate it:
Views: 17

More Political Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

Email
07 Aug, 2018
About the Author: Tooba
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City