اک حسیں کی یہ مہربانی ہے
Poet: Babar ilyas babar
By: Babar Ilyas Babar, Muzaffarabad

 اک حسیں کی یہ مہربانی ہے
زندگی جو تباہ اپنی ہے

پیار میں خود کشی کا سوچا تھا
میری دل بر نے جان لے لی ہے

کل تری ہو گئی ودائی کیا
شاہراہِ حیات سُونی ہے

جس کو میں نے لہو سے لکھے خط
اُس کے ہاتھوں پہ آج مہندی ہے

اک طرف عشق کا جنازہ ہے
اک طرف اُس کی ڈولی اُٹھی ہے

جس کو منزل سمجھ رہے تھے ہم
وہ عجب منزلوں کی راہی ہے

Rate it: Views: 6 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 11 Sep, 2018
About the Author: Babar Ilyas Babar

Visit Other Poetries by Babar Ilyas Babar »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.