خیال
Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

ترے خیالوں سے بھی دور جانے والا ہوں
میں اپنے سارے نشاں خود مٹانے والا ہوں

ہزار بار بلانے پہ بھی نہیں آئے
تمہارے سامنے میں خود ہی آنے والا ہوں

جلا کے پھینک دیے ہیں وہ تیرے سارے خط
سوال اپنے میں سارے جلانے والا ہوں

کسی کو غم نہ ملے اور سب رہیں مل کر
میں ایسی اک نئی دنیا بسانے والا ہوں

یہ بوجھ دل کا بہت درد دے رہا ہے مجھے
تمہارے رازوں سے پردہ اٹھانے والا ہوں
 

Rate it: Views: 12 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More General Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 03 Jan, 2019
About the Author: Muhammad Arshad Qureshi

My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More

Visit 155 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.