اسے منا کر غرور اس کا بڑھا نہ دینا
Poet: Qateel Shifai
By: farooq, lhr

اسے منا کر غرور اس کا بڑھا نہ دینا
وہ سامنے آئے بھی تو اس کو صدا نہ دینا

خلوص کو جو خوشامدوں میں شمار کر لیں
تم ایسے لوگوں کو تحفتاً بھی وفا نہ دینا

وہ جس کی ٹھوکر میں ہو سنبھلنے کا درس شامل
تم ایسے پتھر کو راستے سے ہٹا نہ دینا

سزا گناہوں کی دینا اس کو ضرور لیکن
وہ آدمی ہے تم اس کی عظمت گھٹا نہ دینا

جہاں رفاقت ہو فتنہ پرداز مولوی کی
بہشت ایسی کسی کو میرے خدا نہ دینا

قتیلؔ مجھ کو یہی سکھایا مرے نبیؐ نے
کہ فتح پا کر بھی دشمنوں کو سزا نہ دینا

Rate it: Views: 21 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Qateel Shifai Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 06 Feb, 2019
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Usually I can read the poetries from here that having here of the many writers that gives the many good guidance in their Urdu poetries
By: resham, karachi on Feb, 09 2019
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.