اور بازار سے کیا لے جاؤں

Poet: Mohammad Alvi
By: hania, khi

اور بازار سے کیا لے جاؤں
پہلی بارش کا مزا لے جاؤں

کچھ تو سوغات دوں گھر والوں کو
رات آنکھوں میں سجا لے جاؤں

گھر میں ساماں تو ہو دلچسپی کا
حادثہ کوئی اٹھا لے جاؤں

اک دیا دیر سے جلتا ہوگا
ساتھ تھوڑی سی ہوا لے جاؤں

کیوں بھٹکتا ہوں غلط راہوں میں
خواب میں اس کا پتہ لے جاؤں

روز کہتا ہے ہوا کا جھونکا
آ تجھے دور اڑا لے جاؤں

آج پھر مجھ سے کہا دریا نے
کیا ارادہ ہے بہا لے جاؤں

گھر سے جاتا ہوں تو کام آئیں گے
ایک دو اشک بچا لے جاؤں

جیب میں کچھ تو رہے گا علویؔ
لاؤ تم سب کی دعا لے جاؤں

Rate it:
08 Jul, 2019

More Mohammad Alvi Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City