زندگی
Poet: Sidra Subhan
By: Sidra Subhan, Kohat

زندگی اس طرح سفر میں ہے
جیسے کشتی کوئی بھنور میں ہے
جسم ملبوس کسی ریشم میں
روح کانٹوں کے رہگزر میں ہے
ہونٹوں پہ مجلسی تبسم ہے
دل انجانے کسی ڈر میں ہے
علم پیتا ہے پانی چشموں کا
آگہی زہر کے اثر میں ہے
سانس خوشبو کی بات کرتی ہے
درد سینے کےبام و در میں ہے
خاک صحرا بدوش ہے لیکن
ایک دریا میری نظر میں ہے
طاق پر ہیں محبتوں کے چراغ
شام نفرت کسی کہر میں ہے
کچھ بھی اپنی خبر نہیں سدرہ
جانے یہ کون اس بشر میں ہے

Rate it: Views: 33 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 12 Jul, 2017
About the Author: Sidra Subhan

*Hafiz-E-Quraan

*Columnist at Daily Mashriq (نگار زیست)

*PhD scholar in Chemistry
School of Chemistry and Chemical Engineering,
Key Laborator
.. View More

Visit 38 Other Poetries by Sidra Subhan »
 Reviews & Comments
wow.

By: kanwalnaveed, Karachi on Aug, 24 2017
Reply Reply to this Comment
Bohat Shukriya
By: Sidra Subhan, Nanning on Mar, 21 2018
Wah Wah bohot umda...Zindagi is tarah safar main hai
By: Muhammad Shariq, Karachi on Jul, 20 2017
Reply Reply to this Comment
Bohat shukriya
By: Sidra Subhan, Nanning on Mar, 21 2018
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.