میں دل پہ جبر کروں گا تجھے بھلا دوں گا
Poet: Mohsin Naqvi
By: iqbal, khi

میں دل پہ جبر کروں گا تجھے بھلا دوں گا
مروں گا خود بھی تجھے بھی کڑی سزا دوں گا

یہ تیرگی مرے گھر کا ہی کیوں مقدر ہو
میں تیرے شہر کے سارے دیئے بجھا دوں گا

ہوا کا ہاتھ بٹاؤں گا ہر تباہی میں
ہرے شجر سے پرندے میں خود اڑا دوں گا

وفا کروں گا کسی سوگوار چہرے سے
پرانی قبر پہ کتبہ نیا سجا دوں گا

اسی خیال میں گزری ہے شام درد اکثر
کہ درد حد سے بڑھے گا تو مسکرا دوں گا

تو آسمان کی صورت ہے گر پڑے گا کبھی
زمیں ہوں میں بھی مگر تجھ کو آسرا دوں گا

بڑھا رہی ہیں مرے دکھ نشانیاں تیری
میں تیرے خط تری تصویر تک جلا دوں گا

بہت دنوں سے مرا دل اداس ہے محسنؔ
اس آئنے کو کوئی عکس اب نیا دوں گا
 

Rate it: Views: 202 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 18 Jul, 2017
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
I like the sharing of Mohsin Naqvi's ghazalz on this Web and read various of collection but my favorite Ghazal is 'Me Dil Pe Jabr Karunga', the poet share his feeling in love in full romantic way.
By: Ghazanfar, khi on Jul, 18 2017
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.