زمین کا آفتاب
Poet:
By: Hukhan, karachi

کیا ہوا جو یہ شام بھی اداس ہے
ہاں جانتا ہوں اداسی کی وجہ بھی بہت خاص ہے
کس قدر شعلہ سرخی سے سجی ستم گر شام ہے
وہ ہے تو خوش مگر بے قرار ہے
شاید اب بھی کسی کا اسے انتظار ہے
دیکھا تھا جو خواب کبھی آج بھی یاد ہے
ہونٹوں پر مسکان مگر آنکھ اشکبار ہے
جو لمحہ بیت گیا بس وہی یادہے
جو اب نہ لوٹ آئے گی بہار اس کاانتظار ہے
نئی پوشاک پر جانے کیوں پرانی سی شال ہے
شال کانہیں سب حسنِ یار کاکمال ہے
سننے کودل کس بے تاب ہے
خان کیوں کرتے ہو تعریف وہ توزمین کا آفتاب ہے

Rate it: Views: 7 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 07 Jan, 2018
About the Author: Hukhan

Visit 405 Other Poetries by Hukhan »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
v good v touchy
By: sohail memon, karachi on Jan, 08 2018
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.