جانے کیوں
Poet: محمد یوسف راہی
By: محمد یوسف راهی, Karachi

جانے کیوں ہمیشہ غلط فیصلے ہوجاتے ہیں مجھ سے
جانے کیوں پہرکچہ لوگ روٹھے رہ جاتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں نہ کر پایا میں کسی کے کے لئے کچھ بھی
جانے کیوں کچھ لوگ کیا کیا کہ جاتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں میں گردشوں میں رہا زندگی بھر یاروں
جانے کیوں دکھ اور پریشانی مل کر چلتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں میں نہیں کرسکتا شکوہ بھی کسی سے
جانے کیوں میرے اعمال اکثر ٹکراجاتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں میرے دن رات کبھی بدلتے نہیں یاروں
جانے کیوں وہی دن رات جڑے رہتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں اک بے چینی سی رہتی ہے میرے اندر
جانے کیوں سکون اور آرام دور رہتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں مگر خدا کی اس میں کیا مصلحت تھی
جانے کیوں اللہ والے بھی ناراض ہوجاتے ہیں مجھ سے

جانے کیوں یہ خیال آتا ہے دل ودماغ میں اکثر رہی
جانے کیوں اس دنیا میں انسان آجاتے ہیں مجھ سے

Rate it: Views: 2 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 11 Jan, 2018
About the Author: محمد یوسف راهی

Visit 15 Other Poetries by محمد یوسف راهی »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.