نگا اٹھی تو زمانے نے بے رخی کر لی
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

نگا اٹھی تو زمانے نے بے رخی کر لی
بس اک عذاب میں کٹتی ہے خود کشی کر لی

صدائیں دینے کی عادت نہیں مجھے لیکن
تجھے بلاتی ہے ہر لمحہ خامشی کر لی

میں تجھ کو چاہ کے بھی تجھ کو پا نہیں سکتا
کبھی تو دیکھ لے آ کر یہ بے بسی کر لی

میں جام توڑ کے اب زہر پینے والا ہوں
نہ کام آئی مرے کچھ بھی بے خودی کر لی

مجھے زمانے کے انداز کوئی سکھلا دے
کہ راس آ نہ سکی مجھ کو سادگی کر لی

وہ روح قلب مرے جسم و جاں کا مالک ہے
میں نے اس کا درد چرا کر اسسے دل لگی کر لی

کوئی تو مقصد شعر و ادب کا ہو گا وشمہ
نہ ہوں جو کام کی ایسی ہی شاعری کر لی

Rate it: Views: 8 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 01 Mar, 2018
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4383 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.