جن کو اللہ سے بس اللہ سے ڈرتے دیکھا
Poet: حیا غزل
By: Haya Ghazal, Karachi

جن کو اللہ سے بس اللہ سے ڈرتے دیکھا
نار کو ان کے لیئے پھولوں میں ڈھلتے دیکھا

ہم نے پتهر کے پہاڑوں کو پگهلتے دیکها
اور پانی کو بهی اس دنیا میں جمتے دیکها

جسم تو جسم ہیں احساس تحفظ کے لیئے
میں نے دیوار سے چھاؤں کو لپٹتے دیکھا

ان گلی کوچوں میں ہے رقص اندهیروں کا جہاں
ہم نے اس چاند کو سج دهج کے گزرتے دیکها

لاش اک سطح تالاب پہ آجاتی ہے
خواب اک آنکھ پہ ہر رات ابھرتے دیکھا

ہم نے دیکھا تھا فلک پر ہی چمکتا سورج
ایک دن پھر وہ گلی سے بھی گذرتا دیکھا

برف میں آگ لگارکھی تھی دو شمعوں نے
سخت سردی میں بھی دو جسموں کو جلتے دیکھا

Rate it: Views: 17 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 02 Mar, 2018
About the Author: Haya Ghazal

I am freelancer poetess & witer on hamareweb. I work in Monthaliy International Magzin as a buti tips incharch.otherwise i write poetry on fb poerty p.. View More

Visit 128 Other Poetries by Haya Ghazal »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.