آج پھر دل جلا کے دیکھتے ہیں
Poet: داد بلوچ فورٹ منرو
By: Dad Baloch, ڈیرہ غازی خان

آج پھر دل جلا کے دیکھتے ہیں
ان سے نظریں ملا کے دیکھتے ہیں

دیکھ کر میکدے میں ساقی کو
کوئی تہمت لگا کے دیکھتے ہیں

بوجھ ہلکا نہ ہوا رونے سے
آج ہم مسکرا کے دیکھتے ہیں

چاندنی ہے چکور آئے گا
اس کی گردن اڑا کے دیکھتے ہیں

اس سے کہنا کہ دادؔ زندہ ہے
وہ جو زہریں پلا کے دیکھتے ہیں

Rate it: Views: 4 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 17 Apr, 2018
About the Author: Dad Baloch

Visit 15 Other Poetries by Dad Baloch »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.