آنچ
Poet: Hukhan
By: Hukhan, karachi

آؤ دھیمی سی آنچ پر جل کر دیکھتے ہیں
ہو کر فنا جی کر دیکھتے ہیں
آؤ اس پر مر کر دیکھتے ہیں
بڑی بڑی ہیں آنکھیں
ان میں ڈوب کےدیکھتے ہیں
کم سن سی عمر اس پر بھرم
خود کو جھکا کر دیکھتے ہیں
لبوں پر ان کے غضب کی مسکان
یہ ستمِ جان سہہ کر دیکھتے ہیں
دسمبر بھی ہوا جلا جلا سا
آتشِ حسن کو اپنا کر دیکھتے ہیں
کرتے ہیں حسنِ خیراں کو ذرابرہم
ان کے گال گلاب کرکے دیکھتے ہیں
سراپاِ قیامت ہوشربا
آج ہمتِ مرداں کرکے دیکھتے ہیں

Rate it: Views: 7 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 20 Jun, 2018
About the Author: Hukhan

Visit 420 Other Poetries by Hukhan »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
bhut allaa
By: sohail memon, karachi on Jul, 17 2018
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.