دعوٰی ءِ بندہ پروری دیکھو

Poet: wasim ahmad moghal
By: wasim ahmad moghal, lahore

دعوٰی ءِ بندہ پروری دیکھو
اور پھر میری زندگی دیکھو

اِن بتوں نے ہے پایا کس نے فیض
عاشقوں کی بھی سادگی دیکھو

میری حالت پہ غور کر لینا
زیرِ لب اُس کی جب ہنسی دیکھو

کلفتیں اور بڑھ گئیں دل کی
مرے دلبر کی دلبری دیکھو

اِس کے اندر بھی ایک دنیا ہے
دل مرا یوں نہ سر سری دیکھو

دل ہی دیکھو نہ ڈوبتا میرا
میری نبضیں بھی ڈوبتی دیکھو

ایسا نہ ہو کہ دیر ہو جائے
دیکھنا ہے تو پھر ابھی دیکھو

سانس روکے ہوئے کھڑے ہی رہو
ٹوٹ جائے نہ خامشی دیکھو

دشمنوں سے میں چھپ کے بیٹھا ہوں
ایک نعمت ہے تیرگی دیکھو

اپنے طرزِ عمل پہ غور کرو
اِس کو کہتے ہو دوستی دیکھو

سب بجا ہیں شکایتیں تیری
جاناں اپنی بھی بے رُخی دیکھو

مدتوں بارہا اسے دیکھا
پھر بھی باقی ہے دلکشی دیکھو

میں تہی دست ہوں تو پھر کیا ہے
ساقیا میری تشنگی دیکھو

سب عزیزوں نے ساتھ چھوڑ دیا
جب سے آئی ہے مفلسی دیکھو

دوست احباب جب نہیں ہوتے
میں نہیں کرتا مے کشی دیکھو

لگ نہ جائے تمہیں بھی دل کی لگی
تم جو کرتے ہو دل لگی دیکھو

کسی پہلو نہیں قرار اِسے
رہ گئی دل میں کیا کمی دیکھو

بارہا جس کو دل میں دہرایا
رہ گئی وہ ہی اِن کہی دیکھو

اُٹھ کے جانا تمہارا پہلو سے
یہ قیامت کی ہے گھڑی دیکھو

آپ کا ساتھ جب نہیں ہوتا
جی جلاتی ہے چاندنی دیکھو

چاند تکتا ہے رات بھر جس کو
یاد آتی ہے وہ گلی دیکھو

اب تو اُٹھ جاؤ اُس کے رستے سے
گرد چہرے پہ ہے جمی دیکھو

چھوڑ دو اِن فضول باتوں کو
دوستو آؤ چاندنی دیکھو

تم تو اپنی ہی کہہ رہے ہو وسیم
اُس کی آنکھوں میں ہے نمی دیکھو
 

Rate it:
Views: 23

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

Email
30 Jul, 2018
About the Author: wasim ahmad moghal
Visit Other Poetries by wasim ahmad moghal »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

ایک مصرعے میں اَن کہی بجائے اِن کہی لکھا گیا ہے۔ امید ہے کہ کتابت کی اس غلطی سے در گزر فرمائیں گے
شکریہ
وسیم

By: wasim ahmad moghal, lahore on Aug, 01 2018

ye hai wo ghazal k jisai sunn parh k qari o samey be sakhta yakmusht kren wao wah wah b ah k sath he

By: uzma, Lahore on Jul, 30 2018

محتترمہ عظمٰی صاحبہ
جس بے ساختہ انداز میں آپ نے داد دی ہے وہ آپ کا حصہ ہے۔آپ جیسے سخن ور اور سخن نواز جب میری کسی غزل کو سراہتے ہیں تو اسے اپنے لئے بڑےاعزازکی بات سمجھتا ہوں آپ نےدو دفعہ تبصرہ فرمایا ہے لگتا ہے کہ آپ نے دو سے زیادہ مرتبہ اسے پڑھا بھی ہےاس عنایت اور مہربانی میں جتنا بھی شکریہ ادا کروں کم ہے
جہاں بھی رہیں سدا خوش رہیں
وسیم
By: wasim ahmad moghal, lahore on Aug, 09 2018

really heart touching.....last verse absolutely expressed the reality of the situation of reader
good luck be happy and stay blessed keep writing as it is

By: uzma, Lahore on Jul, 30 2018

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City