تیری چاہت نے ہمیں ایسا رسوا کیا

Poet: سید علی
By: Syed Ali Naqvi, Islamabad

تیری چاہت نے ہمیں ایسا رسوا کیا
کہ ہم بھول گئے کہ ہے رسوائی کیا

ہم ڈوب مریں گے تیری چاہت میں ایسا
کہ ہم بھول جائیں گے کہ ہے رسوائی کیا

تم نے داستان عشق اس طرح لکھ دیا
کہ ہم بھول گئے کہ ہے رسوائی کیا

تم سے ہم کچھ اس طرح سے ملیں گے
کہ لوگ کہیں گے کہ بھول گیا ہے رسوائی کیا

لوگوں نے مجھے اس طرح طعنے دئیے
کہ تو بھول گیا کہ ہے رسوائی کیا

علی دنیا تو کسی حال میں جینے نہیں دیتی
کہتے ہیں بھول گیا ہے چاہت کی رسوائی کیا

Rate it:
29 Sep, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Ali Naqvi
Visit 2 Other Poetries by Syed Ali Naqvi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City