خزاں آئی گلستاں میں تو سارے گل گئے

Poet: Zeeshan Lashari
By: Zeeshan Lashari, Kunri

خزاں آئی گلستاں میں تو سارے گل گئے
جو نغمہ خوان تھے اسکے سبھی بلبل گئے

ہمارے ساتھ بیٹھےتوبڑے چپ چاپ بیٹھےتھے
جوآئے غیر محفل میں تو ان سے گھل گئے

کہاواعظ نےمجھکو دیکھ کرکوچےمیں اسکے
چلے جاؤ جو آئے ا س گلی میں رل گئے

سلامت تا ابد یہ میکدہ تیرا رہے ساقی
کہ جوبھی داغ تھےفرقت کےا س میں دھل گئے

بڑی شوخی سےمحفل میں سجائےزلف بیٹھےتھے
چلی باد صبا جو پیچ و خم تھے کھل گئے

عداوت تھی جوہم سےاسقدران محترم کو
کہ آئے قبر پر تو بن پڑھے وہ قل گئے

جودیکھا شیخ صاحب نےرخ جاناں کااک جلوہ
تو زمزم بیچ ڈالا اور لے کے مل گئے

سوا افسانہء دل کےکہا بھی کچھ نہیں تھا شان
تو کیوں وہ جان لینے پر ہماری تل گئے

Rate it:
04 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Zeeshan Lashari
Visit 16 Other Poetries by Zeeshan Lashari »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City