ستم ظریفی

Poet: Syed Zulfiqar Haider
By: Syed Zulfiqar Haider, Dist. Gujranwala ; Nizwa, Oman

وہ رات کتنی کٹھن تھی میرے لئیے
جس رات کوئی اپنا مجھ سے جُدا ہوا

نہ چاہتے ہوئے بھی الوداع کہنا پڑا
موت سے پہلے ہی مرنے کا کوئی طلبگار ہوا

کس سے شکایت کریں کس کو فریاد کہیں
وقت ہی جب ہمارے ملن کے آڑے ہوا

ایک ایسا خون ہوا جس کی تفتیش بھی نہیں
دوست جو میرے قتل میں غیروں سے شامل حال ہوا

نہ شکوہ ہے قسمت سے نہ کسی پے افسوس ہے
جس کے لئیے تھے زندہ وہ ہی موت کا پیغام ہوا
 

Rate it:
16 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Zulfiqar Haider
Visit 50 Other Poetries by Syed Zulfiqar Haider »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City