یوں بھی تو تری راہ میں دیوارپہ چل کر

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

یوں بھی تو تری راہ میں دیوارپہ چل کر
ہم حسن طلب عشق کے بیمارسنبھل کر

اتنا بھی محبت کو نہ سوچے مری ہستی
یہ معجزۂ فکر کہیں دل سے مچل کر

کیا حاصل کار غم الفت ہے کہ مجنوں
اب دشت نوردی کو بھی تیار ہے حل کر

اس شہر میں احساس کی دیوی نہیں رہتی
ہر شخص کے چہرے کو نیا دیکھ سنبھل کر

پھر تجھ سے جدا ہو کے کہیں خود سے بچھڑ جائیں
ہم لوگ کچھ ایسے بھی دل آزاربدل کر

تو جسم کے اندر ہے کہ باہر ہے کدھر ہے
وشمہ مری جاں کب سے تجھے ڈھونڈ نکل کر

Rate it:
20 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City