کتنے دور ہو گئے

Poet: Syed Zulfiqar Haider
By: Syed Zulfiqar Haider, Gujranwala, Pakistan ; Nizwa, Oman

ہم کس قدر پاس تھے کتنے دور ہو گئے
زندگی تھی ساتھ اس سے کتنے دور ہو گئے

ہم دونوں کا ساتھ تھا کتنا ہی خوبصورت
محبت تھی ساتھ اس سے کتنے دور ہو گئے

لوگ دیتے تھے مثالیں تیری میری چاہت کی
تڑپ تھی درمیان اس سے کتنے دور ہو گئے

تلخیاں نہ کوئی دکھ تھا ہمارے قریب بھی
مٹھاس تھی درمیان اس سے کتنا دور ہو گئے

مجھ سے دور رہنا کتنا کٹھن ہوتا تھا تیرے لئے
سانجھ تھی درمیان اس سے کتنے دور ہو گئے

میں نہیں کر سکتا تھا تصور تجھ سے بچھڑنے کا
تقدیر تھی ساتھ اس سے کتنا دور ہو گئے
 

Rate it:
20 Oct, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Zulfiqar Haider
Visit 50 Other Poetries by Syed Zulfiqar Haider »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

بہترین

By: Amna Zimal, Islamabad on Oct, 22 2018

good one

By: Mareena Abid, Karachi on Oct, 22 2018

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City