جدا رہنے کی سزا دیتا ہے

Poet: Syed Zulfiqar Haider
By: Syed Zulfiqar Haider, Gujranwala, Pakistan ; Nizwa, Oman

جب بھی تمہیں یاد کروں پلکیں بھیگ جاتی ہیں
تیرا بچھڑنا ناسور بن کر دل کو زخم دیتا ہے
آخر جھوٹی نکلیں وہ قسمیں بے وفا نکلا تُو بھی
تجھ سے بڑھ کر تجھے چاہا پھر بھی تُو فریب دیتا ہے

زمانے سے بیگانہ ہوا سکون میں تھا اب بے قرار ہوں
سانسوں میں بسایا تجھے مہکے پھولوں کی چاشنی کی طرح
مسکرانا سکھایا خوشگوار سپنے بُنے تیرے لئے
کیسے ایک لمحے میں چھوڑ دیا کیا خاص اہمیت دیتا ہے

پہلی ملاقات میں درد دل بڑھا کر مسکراتا تھا
میری خوشی کو اپنی زندگی کا سرمایہ سمجھتا تھا
میرے پیار بھرے خط پڑھ کر مہک سا جاتا تھا
بدلا ہے کیسے ظالم انجانے زخمِ جدائی دیتا ہے

میرے چہرے کو مہتاب ہونٹوں کو چھلکتا جام کہتا تھا
میری دید کواپنی آنکھوں کی آرزو دل کا قرار کہتا تھا
چاہت کے باوجود انجانے پن کو اپنی مجبوری کہتا تھا
پیار تھا درمیان پھر کیوں جدا رہنے کی سزا دیتا ہے
 

Rate it:
21 Oct, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Zulfiqar Haider
Visit 50 Other Poetries by Syed Zulfiqar Haider »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

seems you have a bitter experience

By: Hassan Ali, Lahore on Oct, 22 2018

it happens

By: Riaz Akhtar, Narowal on Oct, 22 2018

so sad

By: Muhammad Sajid, Islamabad on Oct, 22 2018

super

By: M. Ahmad, Faisalabad on Oct, 22 2018

lovely

By: Mahmood , Sheikhupura on Oct, 22 2018

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City