میرے ہمسفر

Poet: Maria Rehmani
By: Maria Rehmani, Kharian

میرے ہمسفر میرے ہم خبر
نئے سال کی طرحمیرے دل میں بھی
بے قرار موسم اترا ہے
ہجر کے خوف سے
تیری یاد کے پنچھی سہمے ہیں
تیرا ہی بس خیال ہے
میرے ویراں اجالوں میں
لپٹ جاتی ہیں احساس بن کر
تیری یادیں اداس راتوں میں
چل پڑا ہے دل میرا
تجھے ڈھونڈنے کے سفر میں
میرے ہم خبر میرے ہمسفر
میں تجھ کو ڈھونڈ لوں ،،،
تو کس نگر؟
اس راہ میں ،،
جس پہ کبھی ہم چلے نہیں
ٹھہر جائوں اس موڑ پر،،،
جہاں کبھی تم رکے نہیں
تجھ کو ڈھونڈ لوں تو کس طرح
میں کس شہر
یا پھر اس درد میں
ابھی جو مجھ کو ملا نہیں
٤میں سفر کروں تو کس قدر
میرے ہمسفر میرے ہم خبر

Rate it:
21 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: maria rehmani
Maria Rehmani from Kharian.. View More
Visit 32 Other Poetries by maria rehmani »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City