دکھا کے پھول وہ مجھ کو۔۔۔۔۔

Poet: m.asghar mirpuri
By: m.asghar mirpuri, birminghaham

دکھا کہ پھول مجھے وہ خار دیتا ہے
اب تو قسطوں میں دیدار دیتا ہے

مجھ سے ملنے کا وعدہ نہیں کرتا کبھی
ہاں فون پہ گپ شپ مار دیتا ہے

پہلے آسماں پہ چڑھاتا ہے چکنی باتوں سے
پھر جلی کٹی سنا کہ نیچے اتار دیتا ہے

زندگی بھر دولت کے سوا کچھ نہ دیا مجھے
اب نئے دوستوں کو سود پہ ادھار دیتا ہے

اصغر کی گلی سے وہ گزرتا ہے جب
اپنی پیاری اداؤں سے مجھے مار دیتا ہے
 

Rate it:
28 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: m.asghar mirpuri
Visit 7419 Other Poetries by m.asghar mirpuri »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City