جس کے قول و فعل میں ۔۔۔۔۔۔

Poet: m.asghar mirpuri
By: m.asghar mirpuri, birminghaham

جس کے قول و فعل میں تضاد ہوتا ہے
ایسا بندہ جھوٹے لوگوں کا استاد ہوتا ہے

ایسے لوگ جس کسی سے دوستی کر لیں
اس کا گھر پھر کبھی نہ آباد ہوتا ہے

نہ جانے کیا کشش ہے ہماری باتوں میں
جہاں چلے جائیں وہیں فساد ہوتا ہے

وہ ملنے کا وعدہ کر کے بھول جاتے ہیں
انہیں کیا وقت تو ہمارا برباد ہوتا ہے

جو اسیر ہو کسی کی محبت کا اصغر
ایسا قیدی بڑی مشکل سے آزاد ہوتا ہے
 

Rate it:
29 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: m.asghar mirpuri
Visit 7419 Other Poetries by m.asghar mirpuri »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City