ایسا ہو اتحاد کہ دنیا مثال دے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

یا رب ہمارے بیچ سے نفرت نکال دے
ایسا ہو اتحاد کہ دنیا مثال دے

ہر درد عاشقی مرے حصے میں دال دے
نازک سے اس کے دل کے نہ رنج و ملال دے

منھ سے تو چھین لے جو نوالہ حرام ہو
عزت کے ساتھ بس ہمیں رزق حلال دے

سیرت سے ہی حسن کی پہچان کر سکیں
نادان عاشقوں کو وہ ذوق جمال دے

باطل کی ساری فوجیں ہوں از خود ھی سر نگوں
کردار میں ہمارے وہ جاہ و جلال دے

ہر کام چھوڑ چھاڑ کے چل د یں نماز کو
مسجد کی ہر ازان کو رنگ بلال دے

لکھنے میں حق کی بات نہ کانپیں کبھی بھی ہاتھ
یا رب مرے سخن کو تو ایسا کمال دے

ارماں وشمہ کا ہے وہ مقدر ہو یا نبی
وقت اجل جو آپ کے قدموں میں ڈال دے

Rate it:
10 Nov, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City