چائے
Poet: Hukhan
By: Hukhan, Karachi

اسے جانے کیوں
چائے پسند نہیں
مگر بات ہے پرانی
ماہ و سال بیت گئے
سنا ہے
سرد موسم میں
اپنی زلف سنوار کے
آنکھوں کو بناکر کمان
شاید ہماری یاد میں
بکثرت چائے وہ پیتا ہے
جانے کیوں بھلا
اس قدر چائے
اب وہ پیتا ہے
سنا ہے سرد موسم
اس پر گراں گزرتا ہے
سچ ہے
ہماری یاد میں
چائے وہ بار بار پیتا ہے
جو زہر لگتی تھی
وہی جی بھر کے پیتا ہے

Rate it: Views: 4 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 17 Nov, 2018
About the Author: Hukhan

Visit 483 Other Poetries by Hukhan »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
very special
By: tariq khan, karachi on Nov, 20 2018
Reply Reply to this Comment
thx
By: hukhan, karachi on Dec, 02 2018
wah zabardast
By: rahi, karachi on Nov, 20 2018
Reply Reply to this Comment
thx
By: hukhan, karachi on Dec, 02 2018
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.