وہ منتظر مری آہٹ کا انتظار کرے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

جو حال آج ادھر ہے وہ بیقرار کرے
وہ منتظر مری آہٹ کا انتظار کرے

وہ سنگدل ہی سہی پر نہ اس قدر ہو گا
محبتوں کا کبھی اس پہ بھی وہ وار کرے

اسے بھی ہو گی تمنا مری رفاقت کی
عزیز اس کو مرا شہر ، اشکبار کرے

وہ چاند مجھ سے تعلق تو خاص رکھتا ہے
میں رات ہوں مرے آنگن میں ہی حصار کرے

ملے گا شام و سحر بے قرار ہو کے مجھے
نہ اس کے بس میں زباں ہو گی نہ ہی پیار کرے

رکی ہوئی ہوں تو اس کے قدم بھی ساکت ہیں
جو چل دیا تو سدا میرا شرمسار کرے

اداس لمحوں میں وشمہ وہ جب ملا مجھ سے
نظر اٹھا کے کہا کچھ نہ جاں نثار کرے
 

Rate it:
25 Nov, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City