اُسے مجھ سے کوئی شکایت نہ رہی

Poet: Sobiya Anmol
By: Sobiya Anmol, Lahore

اُسے مجھ سے کوئی شکایت نہ رہی
کیا سمجھوں اِسے کہ محبت نہ رہی

یا ہار گیا وہ محبت کے آگے
محبت کو جھیلنے کی ہمت نہ رہی

الجھا الجھا سا ہے وہ کئی دنوں سے
اُس کی باتوں میں وہ شدت نہ رہی

زمانے کا ہی ہو کے رہ گیا ہے
میرے ملن کی اُسے فرصت نہ رہی

ہمارا دیدار اُس کی ضرورت تھا کبھی
اب اُسے اِس کی ضرورت نہ رہی

وہ اکثر دیکھا کرتا تھا حیرانگی سے
نظر میں اُس کی حیرت نہ رہی

تقدیر نے رنگ ہی بدل ڈالے اپنے
نصیبوں میں اپنے وہ رحمت نہ رہی

Rate it:
10 Dec, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City