دسمبر آؤ کہ میں نے تمہاری خاطر

Poet:
By: uzair, lhr

دسمبر آؤ کہ میں نے تمہاری خاطر
یہ پورا سال گِن گِن کر گذارا ہے

تمہارے ساتھ وابستہ ہیں میری ان گنت یادیں
کبھی پایا ، کبھی کھویا ، کبھی ہنس د یا ، کبھی رویا

تیری شامیں ، میری سانسیں
تیرے وہ دن کسی کے بِن

کبھی حدّت کی چاہت میں
بہت ہی برف لہجوں کو

کبھی ہنس کر بھلا ڈالا
کبھی یوں ہی گنوا ڈالا

تیرے سینے میں چھپ کر میں نے اپنے ہجر لمحوں کو بھلایا ہے
تیری بھیگی دوپہروں میں یہ میں نے راز پایا ہے

کہ انسان کس طرح سے برف ہو جاتے ہیں ہجراں میں
جدائی روگ بن کر امر ہو جائے

تو پھر خوشیاں اس طرح سے روٹھ جاتی ہیں
جس طرح سے ہر گزرتا سال

دسمبر کی آخری شب کے بعد
ہم سے روٹھ جاتا ہے

 

Rate it:
11 Dec, 2018

More December Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

The poet is in Sad mood, his sad poetry shows the intention with his love ones. The way when he express his feelings when the beginning of December is different from the other poet. I will definitely share 'December Aoo Kai Mene' with my love.

By: zehra, khi on Dec, 11 2018

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City