جادو کرتا ہے وہ بس خاموش نظر سے

Poet: Sobiya Anmol
By: Sobiya Anmol, Lahore

جادو کرتا ہے وہ بس خاموش نظر سے
یہی جادو دیکھ رہی ہوں لمبی عمر سے

دلچسپ ہے اُسکا مست آنکھوں سے دیکھنا
میں خوش ہوں اُس کے مست منظر سے

زبان کھول نہ دے ٗ کہیں یہ ادا نہ چھوڑ دے
اظہارِ وفا نہیں کرتی مَیں اِسی ڈر سے

دُعائیں لیتا ہے لمبی لمبی دِکھا کے آنکھیں
داد لیتا ہے وہ شام و سحر اِسی ہنر سے

پیاس کا وسیع سمندر ہیں وہ مدہوش آنکھیں
خود مے و جام بھی ٗٗٗ یہ چرچا ہے شہر سے

جو پڑا تھا گھائل اِک عمر سے دشت میں
جی اُٹھا دیوانہ اُس کی اِک ہی لہر سے

للچا گئی روح زندگی پانے کے لیے پل میں
کام لے رہی تھی اندھیر نگروں میں صبر سے

اُس کا آنا ہی عذاب و زوال ہوتا ہے
صدائیں اُٹھنے لگتی ہیں دیوانوں کی قبر سے

Rate it:
12 Dec, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City