ایک لڑکی

Poet: ابوبکر راں
By: ابوبکر راں, Gujranwala

تجھے میں کیا سمجھتا ہوں؟
تو بلکل ہی غلط سمجھی
نہ تو ہے موم کی گڑیا
نہ ہی کوئی پھول نازک سا
تو وہ پھول ہے جس میں
خوشبواور پتیاں بھی
پہرے میں ہیں کانٹوں کے
یہ کانٹے جو سمجھے تو
محافظ ہیں تمہارے
مگر کچھ بھنورے بھی پھرتے ہیں
خوشبو تیری چرانے کو
نہ اتنی تاریک ہے دنیا
نہ ہے یہ محض روشن
یہ اک سکے کے دو پہلو
کبھی جو تم اچھالو تو
کبھی دیکھو تو اجالا
کبھی سمجھو تو تاریکی
یہ دنیا اک تماشہ ہے
ہم اس میں ہیں کٹھ پتلی
مگر کچھ مداری ہیں
جو اس سے شناسا ہیں

Rate it:
23 Dec, 2018

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: ابوبکر راں
Visit 2 Other Poetries by ابوبکر راں »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City