اس کی خواہش تھی میں آہ و زاری کروں

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کوئی فرمان دل کا بھی جاری کروں
اس کی خواہش تھی میں آہ و زاری کروں

کون ہوتا ہے وہ آ کے کاٹیں جڑیں
خون سے جن کی میں آبیاری کروں

قید آنکھوں میں جس کی مرے راز ہیں
کیسے اس شخص سے پردہ داری کروں

دے کی خوشیوں کی ہر ایک اس کو کلی
نام اپنے میں ہر بیقراری کروں

شام ِ ہجرت کا اکثر میں غم بانٹنے
رات ڈھلتے ہی اختر شماری کروں

اس کی نفرت کے بدلے ہے عادت مری
خود پہ وشمہ محبت کو طاری کروں

Rate it:
02 Jan, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City