مجھے تم چپ ہی رہنے دو

Poet: محمد اطہر طاہر
By: Athar Tahir, Haroonabad

مجھے تم چپ ہی رہنے دو
یہ تیرے حق میں بہتر ہے
میرا ہر بول خنجر ہے
میرا ہر لفظ نشتر ہے
میرے لہجے کی تلخی سے
تم بچ نکلو تو بہتر ہے
اب ! کہ اتنازہر ہے مجھ میں
میں دنیا پھونک دوں ساری
تیرے ہجر نے جاناں
مجھے سوغات بخشی ہے
اُجلے روشن دن کے بدلے
زہریلی رات بخشی ہے
عبرتِ نگاہ بخشی
ہستیءِ فنا بخشی
چھین کر خوش خلقی
اور سلیقہءِ زندگی
بدمزاجی سونپ دی
اب کہ...!
اِس بدمزاجی سے
اُس شگفتہ مزاجی تک
صد ہزار سالوں کا
فاصلہ ہے آسیبوں کا
عمر کٹ تو سکتی ہے
فاصلہ نہیں کٹتا
تم ہوکہ مل نہیں سکتے
مزاج کہ بدل نہیں سکتا
مجھے تم چپ ہی رہنے دو

Rate it:
12 Jan, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Athar Tahir
Visit 105 Other Poetries by Athar Tahir »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City