صبر

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

اکثر یہ صبر کہتا ہے دھیرے سے کان میں
عجلت سے کب ملے گی مسرت جہان میں

ہر وقت زہر ہی کیوں اگلتے ہو تم یہاں
کچھ تو مٹھاس لاؤ تم اپنی زبان میں

چھوڑا ہمیں جو تم نے یوں بے آسرا یہاں
رکھے خدا تمہیں بھی اب اپنی امان میں

ایسا نہیں کہ اب نہ کبھی مل سکیں یہاں
رکھتے ہوں کیوں ہمیشہ برا ہی گمان میں

ہم نے کیا ہی کیا ہے برا ساتھ آپ کے
الزام کیوں یہ دھرتے ہو دنیا جہان میں

کیسا پڑا ہے قحط محبت کا شہر میں
مرجھا رہے ہیں پھول بھی اب تو دکان میں

آتا نہیں ہے چین مجھے اب کیوں یہاں
کیا ایک ہی وہ شخص تھا سارے جہان میں
 

Rate it:
14 Jan, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 180 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City