شیشہ دل میں تیرے ذکر کی مہہ ہے

Poet: Mubeen Nisar
By: Mubeen Nisar, Islamabad

شیشہء دل میں تیرے ذکر کی مہہ ہے
کیا کروں اب ہوش میں آنا حرام ہے

یوں تو سحر ہے آفتاب کے نکلنے سے
یہاں خیال میں تیرا نور صبح و شام ہے

آنکھیں تو دیں پر طاقت_دید نہ دی
موسی کی جرات_تقاضا بھی ناکام ہے

تیری تلاش آخر دل تک لے آئی مجھے
تیرے ہی گھر میں آخر تیرا قیام ہے

ستاروں کی انجمن، کہکشاوں کے دائرے
تیرے ہی ذکر کی محفل کا اھتمام ہے

طواف_کعبہ منظر کشی ہے ہر ذرے کی
طواف_مرکز، آغاز_بندگی کا مقام ہے

ہر لمحہ سانس کا آنا ، دل دھڑکا جانا
تیری جانب سے زندگی کا پیام ہے

Rate it:
19 Jan, 2019

More Sufi Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: mubeen nisar
Business, Physics & literature... View More
Visit 236 Other Poetries by mubeen nisar »

Reviews & Comments

my friend suggest me this page she told me that on this page all types of poetries are available you must check it .and she is absolutely right because on this page all poetries are available.

By: maham, islambad on May, 20 2019

Another kind of freedom is embodied in movement and
change, sometimes sudden

By: Ghashiya, lahore on Mar, 06 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City