والّیل کے سائے میں گھٹا مانگتے ہیں

Poet: سید قمر احمد سبزواریؔ
By: Sabeel, Lahore

والّیل کے سائے میں گھٹا مانگتے ہیں
والشمس کی کرنوں کی ضیاء مانگتے ہیں

اے رحمت عالم ﷺ ترے جلوئوں کے تصدق
ہم روضۂ انور کی ضیاء مانگتے ہیں

دے فتح مُبین تین سو تیرہ ہیں مسلماں
اللہ سے آقاﷺ یہ دُعا مانگتے ہیں

سرکار ﷺ ہیں مہتاب تو اصحاب ؓ ستارے
ہم صدقؓ و وفاؓ ،عدل ؓ و حیاؓ مانگتے ہیں

کب تک ہمیں حالات سے زنجیر کرو گے
ہم عشق بلالیؓ کی دُعا مانگتے ہیں

بس ایک کرن بخش دے ! اے ماہ منو ّر
ہم روشنی ٔ غارِ حرا مانگتے ہیں

رہ رہ کے خیال آتا ہے بس دِل میں قمرؔ کے
جنت کی کیاری میں دُعا مانگتے ہیں

Rate it:
27 Jan, 2019

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sabeel
میرا تعلق صحافت کی دنیا سے ہے 1990 سے ایک ماہنامہ ّّسبیل ہدایت ّّکے نام سے شائع کر رہا ہوں اس کے علاوہ ایک روزنامہ نیوز میل لاہور روزنامہ الجزائر لاہو.. View More
Visit 2 Other Poetries by sabeel »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City