اپنی ہی آواز کو بے شک کان میں رکھنا
Poet: Ahmed Faraz
By: afshan, khi

اپنی ہی آواز کو بے شک کان میں رکھنا
لیکن شہر کی خاموشی بھی دھیان میں رکھنا

میرے جھوٹ کو کھولو بھی اور تولو بھی تم
لیکن اپنے سچ کو بھی میزان میں رکھنا

کل تاریخ یقیناً خود کو دہرائے گی
آج کے اک اک منظر کو پہچان میں رکھنا

بزم میں یاروں کی شمشیر لہو میں تر ہے
رزم میں لیکن تلوار کو میان میں رکھنا

آج تو اے دل ترک تعلق پر تم خوش ہو
کل کے پچھتاوے کو بھی امکان میں رکھنا

اس دریا سے آگے ایک سمندر بھی ہے
اور وہ بے ساحل ہے یہ بھی دھیان میں رکھنا

اس موسم میں گل دانوں کی رسم کہاں ہے
لوگو اب پھولوں کو آتش دان میں رکھنا

Rate it: Views: 19 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Ahmed Faraz Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Feb, 2019
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Hailing from an Urdu-speaking family
By: Maria, Suez on Feb, 06 2019
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.