الفت نہیں رہی

Poet: Rizwana waqar
By: Rizwana Waqar, Lahore

اب کسی سے دلچسپی نہیں رہی
وہ الفت نہیں رہی ،محبت نہیں رہی

چشم اب حیران نہیں ہوتی رنگ و نور سے
شاید ان ستاروں میں روشنی نہیں رہی

نرالے ہی ڈھنگ دیکھے زمانے کے
دیکھنے کی اور اب سکت نہیں رہی

انساں کہاں یہ مخلوق اور ہے کوئی
کہ باقی ان میں انسانیت نہیں رہی

ہیں کہنے کو یہ زندہ لوگ
قسم سے زندگی ان میں نہیں رہی

عقل قل ہے ارے ہر کوئی
دیوانے میں بھی دیوانگی نہیں رہی

بابی اب کون پوچھتا ہے تمہیں
بات تم میں بھی ویسی نہیں رہی

Rate it:
12 Feb, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: rizwana waqar
Visit 143 Other Poetries by rizwana waqar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City