چل چھوڑ لکھ اپنی غزل چل اپنی راہ پھر اداس

Poet: ہارون الرشید اداس
By: Haroon Ur Rasheed uDas, Muzaffarabadak

میں کبھی خود کو وقت کے ہاتھوں رسوا نہیں کرتا
جسے چلنا نہ ہو ساتھ میرے میں اسے گمراہ نہیں کرتا

آہ تو چھوڑ جائے گا مجھے تو مر جاوں گا میں
گیا وہ جب تو جانا کہ محض تھی باتیں کوئی نہیں مرتا

فنا کر لینا محبت میں اور نام وفا پر وعدوں کے دعوے
فقط اک شرط ہے محبت کی مگر پوری کوئی نہیں کرتا

دیکھا جو خواب اس نے کہ مرچکے ہیں ہم اب
زندگی تو ہے دلوں میں رہنا بھلا شاعر کب مرتا

روکے مجھے رکتا نہیں میں کبھی روکنے سے
خوف ہو بھلا جو چاہوں وہی میں کر گزرتا

دلوں کو جوڑ جوڑ کر تھک سا گیا ہوں میں
کوئی جو سمجھ لے مجھے بھی کوئی پرواہ نہیں کرتا

چل چھوڑ لکھ اپنی غزل چل اپنی راہ پھر اداس
یہاں زندہ لوگوں کو سوا درد کہ کچھ نہیں ملتا

Rate it:
14 Feb, 2019

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Haroon Ur Rasheed uDas
Visit 43 Other Poetries by Haroon Ur Rasheed uDas »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Serious students of poetry should use the dictionary to
look up familiar words

By: bakhtawar, hydrabad on Mar, 06 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City