کیسے زندہ ہوں اس زمانے میں

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کیسے زندہ ہوں اس زمانے میں
خامشی ہے نگار خانے میں

دل کے موتی کو چور کر ڈالا
غم کا تحفہ ملا خزانے میں

شہرِ جاناں سے دوستی نہ رہے
آج حسرت ہے دل دوانے میں

ایک ہم کو نہ مل سکی جنت
تیری قدرت کے کارخانے میں

میں نے اپنی گزار دی ہے حیات
عشق صاحب کے آستانے میں

ساری دنیا یہ میرا گھر ہے اگر
کیا قباحت ہے دل لگانے میں

عشقِ کربل ہے روشنی وشمہ
عزمِ شبیر ہے فسانے میں

Rate it:
20 Feb, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City